وزیر تعلیم سندھ سعید غنی نے صوبے میں آن لائن کلاسز کیلئے ایپلی کیشن متعارف کرادی۔ کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سعید غنی کا کہنا تھا کہ اس ایپ کے ذریعے بچے موبائل، لیپ ٹاپ اور دیگر ڈیوائسز پر ڈیجیٹل کلاس میں شریک ہوسکیں گے، یہ ایپ سندھی، اردو اور انگریزی زبان میں ہے۔ سعید غنی کا کہنا تھا کہ ابھی اسکول کھولنے کی پوزیشن میں نہیں ہیں، کوشش کریں گے زیادہ سے زیادہ بچوں کو اپنے سسٹم سے منسلک کرلیں،انٹرنیٹ کی سہولت بہت سے طلبہ کومیسر نہیں،اس پرکام کر رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ڈیجیٹل کلاسز کیلئے اساتذہ کو بھی تربیت دے رہے ہیں، یہ ایپ کے جی سے لے کر پانچویں جماعت تک کے بچوں کیلئے ہے، ہمیں لگتا ہے اسکول کھول بھی لیں تو والدین بچوں کو نہیں بھیجیں گے۔ صوبائی وزیر تعلیم کا کہنا تھا کہ کیبل آپریٹرز سے بھی بات کی جارہی ہے کہ ایک چینل تعلیم کیلئے مختص ہوجائے۔ دوسری جانب پرائیوٹ اسکولز منیجمنٹ ایسوسی ایشن نے عید کے بعد اسکول کھولنے کا مطالبہ کیا ہے۔ پرائیوٹ اسکولز منیجمنٹ ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ جب مارکیٹیں کھلی ہیں تو تعلیمی ادارے بند کیوں ہیں؟ https://urdu.geo.tv/latest/221845-