وزیراعظم عمران خان نے ایم کیو ایم پاکستان کے رہنماؤں کی تعریفوں کے پل باندھ دیئے۔ اسلام آباد میں وفاقی اردو یونیورسٹی حیدرآباد کا سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ جب ہماری کابینہ بنی تو ایم کیو ایم کے دو وزیر فروغ نسیم اور خالد مقبول ہمارے ساتھ شامل ہوئے۔ عمران خان نے کہا کہ میں دونوں کو نہیں جانتا تھا کہ ان کا بیک گراؤنڈ کیا ہے اور مجھے خوف تھا کہ ہماری کوئی بات مانی نہ گئی تو کہیں کابینہ میں بندوق ہی نہ نکل آئے لیکن آج میں کہتا ہوں کہ کابینہ میں ان دونوں سے نفیس آدمی موجود نہیں ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہمیشہ سے سمجھتا تھا ایم کیو ایم کا نظریہ تحریک انصاف سے ملتا ہے، اصل مسئلہ صرف شر پسندی کا تھا لیکن اب لگتا ہے کہ اگلا الیکشن تحریک انصاف اور ایم کیو ایم مل کر لڑیں گے۔ https://urdu.geo.tv/latest/198713-