پاکستان مسلم لیگ ن کے سیکرٹری جنرل احسن اقبال کا کہنا ہے کہ وزیراعظم عمران خان فاشسٹ مائنڈ کے تحت اپوزیشن کے خلاف کارروائیاں کررہے ہیں۔ لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے احسن اقبال کا کہنا تھا کہ عمران خان اپنے اتحادی اسپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الہٰی کو (حمزہ شہباز سمیت اپوزیشن ارکان کے) پروڈکشن آرڈر جاری کرنے کی پاداش میں قومی احتساب بیورو (نیب)کے ذریعے تنگ کررہے ہیں۔ احسن اقبال کا کہنا تھا کہ نیب کی جانب سے شہباز شریف کے حوالے سے جو بے بنیاد بیان جاری کیا گیا ہے اس پر ہمارا مطالبہ ہے کہ نیب کی شہبازشریف سے جو آخری تفتیش تھی اس کی ویڈیو بھی عوام کے سامنے پیش کی جائے تاکہ عوام کو بھی پتہ چلے کہ نیب کے سوال کیا تھے اور شہبازشریف نے جواب کیا دیے۔ ن لیگ کے جنرل سیکرٹری کا کہنا تھا کہ حکومت کے پاس کورونا سے متعلق کوئی لائحہ عمل نہیں، اب جو کرنا ہے کورونا نے ہی کرنا ہے، دعا کریں کہ کورونا کے دل میں رحم آجائے کہ پاکستانیوں پر ایک اناڑی اور نااہل حکومت نافذ ہے تو میں اس قوم کا کم سے کم نقصان کروں۔ اس موقع پر سابق اسپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق کا کہنا تھا کہ حکومت اور اپوزیشن کے درمیان نیب کے قانون سے متعلق اس وقت کوئی مذاکرات نہیں چل رہے، نیب قانون میں ترمیم نہیں نیب کو مکمل ختم کرنا ہوگا،یہ غلط تاثر دیا جارہا ہے کہ شاید کوئی مذاکرات چل رہے ہیں جس میں 18ویں ترمیم کو لنک کیا جارہا ہے۔ 'کورونا سے مقابلے کے بجائے حکومت اپوزیشن سے جنگ کررہی ہے' ن لیگی رہنما سعد رفیق کا کہنا تھا کہ شہبازشریف،بلیغ الرحمٰن اور رانا ثنا اللہ کو نوٹس دے کر ہمارا نظریہ تبدیل نہیں کیا جاسکتا، بجائے کورونا کا مقابلہ کرنے کے حکومت اپوزیشن کے ساتھ یکطرفہ جنگ کررہی ہے اس سے بڑی غیردانشمندانہ اور نادان سوچ کوئی اور نہیں ہوسکتی۔ سعد رفیق کا کہنا تھا سوچ یہ ہے کہ میرے سارے مخالف مر جائیں اور میں اکیلا راج کروں، سرکاری اہلکار اور سرکاری مشینری ہونے کے باوجود ٹائیگر فورس بنانےکی کیا ضرورت تھی؟ https://urdu.geo.tv/latest/221004-