سینیٹ اجلاس کے دوران پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے فیصل جاوید اور پیپلزپارٹی (پی پی پی) کے مولا بخش چانڈیو کے درمیان تندوتیز جملوں کا تبادلہ ہوا۔ سینیٹ اجلاس میں فیصل جاوید کے فقرہ کسنے پر مولا بخش چانڈیو نے کہا کہ ’بے بی آپ بیٹھ جائیں‘ جس پر انہوں نے جواب دیا کہ ’بے بی تو بلاول ہے‘۔ اس پر مولا بخش چانڈیو اشتعال میں آگئے اور کہاکہ ’تم بلاول کے جوتے کے جیسے بھی نہیں ہو ، اب بلاول کا نام مت لینا‘۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ وزراء عمران خان کے لیے مسائل پیدا کر رہے ہیں، معلوم نہیں کیوں یہ خود گھر جانا چاہ رہے ہیں۔ اس دوران ایک بار پھر سینیٹر فیصل جاویدنے جملہ کسا جس پر مولا بخش چانڈیو اشتعال میں آگئے جبکہ چیئرمین سینیٹ بھی فیصل جاوید کو روکتے رہے اور الفاظ حذف کرادیے۔ چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی ارکان کو خاموش کراتے رہے اور انہوں نے سینیٹ اجلاس جمعہ 9 نومبر صبح ساڑھے 10 بجے تک ملتوی کردیا۔ https://urdu.geo.tv/latest/207805-